مردوں کے بازار حسن میں

مردوں کے بازار حسن میں

دینہ سے قرطبہ ہجرت کی داستاں قسط دوئم
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔،،۔،۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مردوں کے بازار حسن میں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کراچی سے سنگاپور پہنچے اور امیگریشن سے فارغ ہوکر سنگاپور شہر کے ایک ایسے علاقے میں پہنچے جسے لٹل انڈیا کہا جاتا ہے سنگاپور جزیرہ انیس سو پینسٹھ تک ملائشیا کا حصہ رہا اسکے بعد الگ آزاد ملک بنا
چھوٹا سا جزیرہ ہے مگر صفائی کا بہترین نظام نظر آیا ساتھ ہر سو دو سو میٹر کے فاصلہ پر ٹیلی فون بوتھ اور ڈرنکس کی خودکار مشینیں نصب ہیں بسوں میں کنڈیکٹر کی بجائے ٹکٹ پرنٹ کرنے والی مشین نصب ہیں یہ ذکر ہو رہا ہے 1996کا جب پاکستان میں میٹرو بس یا ایسی جدیدٹرانسپورٹ کا دور دور تک نام و نشان تک نہ تھا
سنگارپور کی آبادی تین نسلوں پر مشتمل ہے جن میں ملائی نسل چینی نسل اور انڈیا کے تامل شامیں جو سو سال پہلے بغرض مزدوری و تجارت یہاں آباد ہوئے
ملائی نسل میں مسلمانوں کی تعداد بھی اچھی خاصی ہے ایک جامع مسجد بھی بنی ہوئی ہے
ایک کاروباری سینٹر مصطفی سینٹر کے نام سے دیکھا جس میں جیولری کا کاروبار کرنے والے انڈین تھے

اسی علاقہ میں پاکستانیوں نے کچھ مکان کرایہ پر لے رکھے ہیں جو یہاں سے الیکڑونکس کا سامان پاکستان لے کر جاتے ہیں ان کو کراچی میں ؛پھیری والا؛ کہا جاتا ہے ان ہی کہ ایک مکان میں دودن قیائم رہا
ایک دن رات کو بڑے بھائی کے ساتھ شہر کی سیر کو نکلا تو ایک گنجان آباد علاقہ میں قطار اندر قطار اسکرٹ پہنےبنی سنوری خواتین کھڑی نظر آئیں جو اپنے گاہکوں کے انتظار میں کھڑی تھیں

ہم سر نیچے کئے اگلی گلی میں پہنچے تو وہاں تیسری جنس کھڑی پائی جہنوں نے میک اپ سے اپنے آپ خوب سجا رکھا تھا وہ اپنی اداووں سے لوگوں کو اپنی جانب متوجہ کر رہی تھیں یا رہے تھے
ہم نے لاہور کے حسن بازار کے قصے سن اور پڑھ رکھے اس لئےاتنا زیادہ تعجب نہ ہوا

مگر جب اسے سے زرا آگے گئے تو قطار اندر قطار نوجوان لڑکوں کو کھڑے دیکھا تو ہم سے رہا نہ گیا اور ہم نے بھائی جان سے دریافت کیا کہ لڑکیوں اور کھسروں کا قصہ تو سمجھ آیا مگر یہ کیا چکر ہے
انہوں نے بتایا کہ یہ بوڑھی خواتین کے خدمتاگار ہیں جن کو طلب ہوتی ہے وہ ان کی خدمات حاصل کرتی ہیں
ہم تیز قدموں سے اس علاقے سے دور بھاگے
ملائشیا کا قصہ اگلی قسط میں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *