ملائیشا کے حلال کریڈٹ کارڈ اور حلال چکن فرائیڈ

ملائیشا کے حلال کریڈٹ کارڈ اور حلال چکن فرائیڈ

(دینہ سے قرطبہ ہجرت کی داستان قسط پنجم)

کوالالمپور کےجدید ائیرپورٹ پر پہنچے تو دوستوں کی جانب سے الوداعی کھانا KFC میں دیا گیا ملائیشا میں اس ملٹی نیشنل کمپنی نے تمام مصنوعات حلال متعارف کروایں ہیں چونکہ 1996تک پاکستان میں KFC کو اپنے ریسٹورنٹ کھولنے کی اجازت نہ تھی اسلئے ہمارے لئے زندگی میں فرائڈ چکن کھانے کا پہلا تجربہ تھا
ہم پینڈوں کا جو تین تین روٹیاں کھا جاتے ہیں مرغی کے دو تین بوٹیوں سے کیا بنناتھا بحرحال نیا ذائقہ چیک کر لیا
ملائیشا میں ایک اور دلچسپ چیز بھی دیکھنے کو ملی کہ اگر آپ مسلمان ہیں اور بنک سے کریڈٹ کارڈ لیتے ہیں تو اس کارڈ سے شراب یا دیگر حرام چیز نہی خرید سکتے
البتہ چائینز نسل اور انڈین نسل کے لوگ اپنی تمام اشیا اس سے خرید سکتے ہیں یعنی حلال کریڈٹ کارڈ Halal CreditCard , ملائشیا کے شاپنگ سینٹرز کئی منزلہ اور جدید مصنوعات سے بھرے ہوئے تھے جاپان کی اکثر کمپنیوں نے اپنی فیکڑیاں ملائشیا میں لگا رکھی ہیں جن کی وجہ سے ملائشیا کی معیشت کافی ترقی کر رہی تھی
یہ ترقی کا سفر دیکھ کر یورپی ممالک سے رہا نہ گیا اور انہوں نے ملائیشا کی اسٹاک مارکیٹ میں ایک مصنوعی بحران پیدا کرکے اس کی ترقی کو بریکیں لگا دیں اس بحرحان پر مہاتیر محمد نے کھل کر امریکی سرمایادار جورج سورس کو تنقید کا نشانہ بنایا کہ اس کی سربراہی میں یہ ہوا جس کی وجہ سے ملائیشن کرنسی کی قیمیت کافی کم ہو گئی
ملائیشن جہاز سے میں اور بڑے بھائی جان ریاض پیرس کے چارلس ڈیگال ائیرپورٹ پر پہنچے یہ ائیرپورٹ گول گنبد نما کثیر المنزلہ ہے دلچسپ بات یہ کہ یورپ میں داخل ہوتے وقت ہماری جیب میں صرف ستر ڈالر تھے وہاں ہمارے میزبان آئے ہوئے تھےجنہوں نے پیرس سے لندن کے ٹکٹ خریدے اور یوں ہم اس سرزمین پر پہنچ گئے جس سلطنت پر کھبی سورج غروب نہی ہوتا تھا جو سکڑ کر پھر جزیرہ تک محدود ہوگئی ہے

img_0783

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *